ڈرام شٹاڈ میں ترقی پسندوں کا اکٹھ

کھبی کوئی تبدیلی سوچ کو بدلے بغیر ممکن نہیں ہے اور ترقی پسند ادب اس میں اپنا اہم کردار ادا کر سکتا ہے جبکہ آج کا زیادہ تر ادب درباری اور پسماندہ ہے

رپورٹ، بیورو چیف جرمنی ۔ شجاعت زیدی

جرمنی کے شہر ڈار م شٹڈ میں محمود سعید کی رہائش گاہ پر اُردو پنجابی مشاعرہ اورعید ملن کی محفل سجائی گئی ، جرمنی میں پنجابی سنگت کے کرتا دھارتا جناب محمود سعید نے تما م شرکاء کو خصوصی دعوت پر مدعو کیا ۔آغاز میں عید کے حوالے سے گفتگو ہوئی جو بعد میں سیاسی اور انقلابی رنگ دھار گئی جس کے بعد شرکاء نے محفل کو ادبی گفتگو سے اس کا رنگ بدل دیا ۔اور شروع میں دانیا ل رضا نے امرتاپریتم کی انقلابی نظم وارث شاہ پڑھ کر حاضرین سے داد وصول کی اس کے بعد جناب ارشاد ہاشمی صاحب نے اپنی تحریر کردہ نظموں میں سے چند نظمیں پڑھیں اور شرکاء نے کھولے دل سے تعریف کی دیگر حاضرین میں سے سید سعید، وسیم احمد ،اور محمود سعیدصاحب نے بھی چند اشعا ر پڑھے اور طاہر ملک صاحب نے پنجابی ادبی اشعار اللہ میاں تھلے آ پڑھے ۔آخر میں معروف ادبی شاعر جناب طفیل خلش صاحب نے اپنی نئی کتاب ’’گونگی پُکار ‘‘ میں سے پنجابی میں کلام پیش کیا جس پر تما م حاضرین نے تعریف کی ، آخر میں پُر تکلف ضیافت کا انتظام بھی کیا گیا تھا۔ 

تصویریں دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں

https://picasaweb.google.com/103414892897909201845/OKcGgD

 

Add comment


Security code
Refresh